انٹر نیشنل

اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیرمیںمظالم رکوانے کیلئے بھارت پردبائوڈالے:اوآئی سی

نیو یارک: جموں و کشمیر کے بارے میں اسلامی تعاون تنظیم کے رابطہ گروپ نے اقوام متحدہ سے کہا ہے کہ وہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ بند کرنے کیلئے بھارت پر دبائوڈالے۔نیویارک میں مقبوضہ کشمیر سے متعلق اسلامی ممالک کی تعاون تنظیم (اوآئی سی) رابطہ گروپ کے ارکان کا اجلاس ہوا جس میں مقبوضہ کشمیر میں جاری صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں پاکستان، سعودی عرب اور آذر بائیجان کے نمائندوں نے شرکت کی۔نیویارک میں او آئی سی رابطہ گروپ اجلاس وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی درخواست پر ہوا۔ اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب منیر اکرم نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا پیغام پہنچایا۔کے پی آئی کے مطابق نیو یارک میں غیر رسمی اجلاس کے دوران رابطہ گروپ نے کہا کہ بھارت پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی ان قرار دادوں پر عملدرآمد کے لئے دباو ڈالا جائے جن میں استصواب رائے کرانے کو کہا گیا ہے تاکہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام اپنا حق خودارادیت استعمال کرسکیں۔ رابطہ گروپ کے ارکان نے مقبوضہ علاقے میں بھارت کی طرف سے بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر گہری تشویش ظاہر کی۔او آئی سی رابطہ گروپ کے ارکان نے مقبوضہ کشمیر میں جاری صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ سمیت دیگر عالمی ادارے بھارت پر دبا ڈالیں اور سلامتی کونسل کی قراردادوں کو عملی جامہ پہنایا جائے۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا خصوصی پیغام پہنچاتے ہوئے اقوام متحدہ کیلئے پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت نئے سکونتی قوانین کے ذریعے منظم انداز میں بھارت کے غیر قانونی مقبوضہ جموں و کشمیر کی آبادی کا تناسب تبدیل کررہی ہے۔ 16 لاکھ سکونتی سرٹیفکیٹس جاری کرنے کا مقصد مقبوضہ علاقے کی مسلمان اکثریت کو ہندواکثریت میں تبدیل کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی طرف سے مقبوضہ جموں و کشمیر کے مسلمانوں کی شناخت مٹانے کیلئے نئی قانون سازی کے ذریعے اردو کی حیثیت بھی تبدیل کی جارہی ہے۔منیر اکرم نے کہا کہ آرایس ایس، بی جے پی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں مظالم کی انتہا کر دی ہے اور مقبوضہ کشمیر میں اردو زبان کی حیثیت تبدیل کرنے کی کوشش کی گئی۔شاہ محمود قریشی نے اپنے خصوصی پیغام میں زوردیا کہ بھارت کے لئے یہ ضروری ہے کہ وہ غیر انسانی فوجی محاصرہ ختم کرے، مواصلاتی نقل و حرکت اور پرامن اجتماعات پر پابندیاں اٹھائے، اسیر سیاسی رہنماوں کو رہا کرے اور نئے سکونتی قوانین واپس لے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت نئی جارحیت کا جواز پیش کر کے فالس فلیگ آپریشن کرسکتا ہے۔وزیر خارجہ نے اپنے پیغام میں کہا کہ بھارت نے جارحیت کے ساتھ پاکستان کے خلاف بیان بازی تیز کر دی ہے اور بھارت نئی جارحیت کا جواز پیش کرکے فالس فلیگ آپریشن کرسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارتی اقدامات سے علاقائی امن وسلامتی کو شدید خطرہ ہے اور بھارت مقبوضہ کشمیر میں غیر انسانی فوجی محاصرے کو فوری اٹھائے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close