پاکستان

بے گھر شہریوں کو اپنی چھت مہیا کرینگے،وزیر اعظم

اسلام آباد:وزیراعظم عمران خان نے ہدایات جاری کی ہیں کہ گھر کیلئے بینکوں سے آسان شرائط پر قرضے لینے والوں پر کوئی اضافی مالی بوجھ نہ ڈالا جائے۔ حکومت کا مقصد بے گھر لوگوں کیلئے اپنی چھت مہیا کرنا ہے۔یہ بات وزیراعظم عمران خان نے اپنے زیر صدارت ہونے والے قومی رابطہ کمیٹی برائے ہاسنگ کے اجلاس سے خطاب میں کہی۔ اجلاس میں ڈاکٹر عشرت حسین، گورنر سندھ عمران اسماعیل، ڈاکٹر شہباز گِل اور سید ذوالفقار بخاری شریک ہوئے۔اجلاس میں متعلقہ وزارتوں کے اعلی سرکاری عہدیدار، چاروں صوبوں سے چیف سیکریٹریز اور اعلی حکام وڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔ وزیراعظم کا اپنے خطاب میں کہنا تھا کہ اس وقت ملک میں بجلی کی کوئی کمی نہیں، نئے کنکشنز دینے میں تاخیر کا کوئی جواز نہیں ہے۔ بجلی کنکشنز کے این او سیز اور منظوری کے طریقہ کار کو سہل بنایا جائے۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ گھروں کیلئے قرض کے خواہشمند شہریوں کو آسانیاں اور سہولتیں مہیا ہوں۔ اس کے علاوہ مختلف یوٹیلیٹی سروسز کیلئے منظوریوں کے طویل مراحل کو آسان بنایا جائے۔ مروجہ طریقہ کار سے تعمیراتی شعبے کیلئے مشکلات پیدا ہو رہی ہیں۔انہوں نے ہدایت کی کہ چیئرمین ایف بی آر اور دیگر متعلقہ ادارے اوورسیز پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے سہولیات دیں۔ بیرون ملک بسنے والے پاکستانی ہمارا قیمتی سرمایہ ہیں۔ اوورسیز پاکستانیوں کے لیے کاروباری سرگرمیوں میں حصہ لینے کی راہ میں حائل رکاوٹیں ترجیحی بنیادوں پر دور کی جائیں۔وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی برائے ہاؤسنگ، کنسٹرکشن و ڈویلپمنٹ کا ہفتہ وار اجلاس،اجلاس میں مشیرِ وزیراعظم عشرت حسین، گورنر سندھ عمران اسماعیل، معاونین خصوصی ڈاکٹر شہباز گِل اور سید ذوالفقار بخاری کے علاوہ متعلقہ وزارتوں کے اعلی سرکاری عہدیداران سمیت چاروں صوبوں سے چیف سیکریٹریز اور اعلی حکام وڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے.اجلاس کو توانائی اور پٹرولیم ڈویڑنوں کی طرف سے نئے تعمیراتی منصوبوں کیلئے بجلی اور گیس کنکشنز کی فراہمی میں آسانیاں پیدا کرنے کے حوالے سے بریفنگ دی گئی ۔ سیکرٹری پٹرولیم نے اجلاس کو بتایا کہ گیس کے نئے کنکشنز کیلئے درکار این. او. سیز کیلئے آن لائن طریقہ کار وضع کیا جا رہاہے جس سے صارفین کیلئے آسانیاں پیداہو گی.چیئرمین پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے اجلاس کو سٹیٹ بینک آف پاکستان کے ساتھ نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کیلئے طے پانے والے باہمی تعاون سے متعلق آگاہ کیا. انہوں نے بتایا کہ دلچسپی رکھنے والے درخواست گزاروں کے حوالے سے اتھارٹی ضروری معلومات بنکوں کو مہیا کرے گی. وزیر اعظم نے واضح ہدایت کی کہ اس وقت ملک میں بجلی کی کوئی کمی نہیں ہے اس لئے نئے کنکشنز دینے میں تاخیر کا کوئی جواز نہیں. انہوں نے اس ضمن میں جاری ہونے والے این. او. سیز اور منظوری کے طریقہ کار کو صارفین کیلئے سہل بنانے کی ہدایت کی. وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ سکیم کے تحت اپنے گھر کے حصول کیلئے بنکوں سے آسان شرائط پر قرضے لینے والوں پر کسی قسم کا اضافی مالی بوجھ نہ ڈالا جائے. انہوں نے کہا کہ حکومت کا مقصد بے گھر لوگوں کیلئے اپنی چھت مہیا کرنا ہیلہذا اس بات کو یقینی بنائیں کہ ان کو آسانیاں اور سہولتیں مہیا ہو. وزارتِ توانائی کو نئے گرڈ سٹیشن بنانے کے حوالے سے سٹینڈرڈ طریقہ کار وضع کرنے اور مستقبل میں اس پر عمل پیرا ہونے کی بھی ہدایت کی گئی. وزیر اعظم نے واضح کیا کہ مختلف یوٹیلیٹی سروسز حاصل کرنے کیلئے منظوریاں لینے کے طویل مراحل کو آسان بنایا جائے کیونکہ مروجہ طریقہ کار سے تعمیراتی شعبے کیلئے مشکلات پیدا ہو رہی ہیں. سیکرٹری وزارت ہاؤسنگ اینڈ ورکس نیاجلاس کوکراچی میں بننے والے رہائشی منصوبے پاکستان کوارٹرز کے حوالے سے بتایا. منصوبے کے تحت 6000 اپارٹمنٹس بنائے جائینگے جس کیلئے حکومت سندھ اور دیگر متعلقہ محکموں سے مشاورت کا سلسلہ جاری ہے. منصوبے کے پہلے مرحلے میں 4 ارب روپے کی لاگت سے 700 رہائشی یونٹس پر آئندہ 3 مہینوں کے دوران کام شروع ہو جائے گا. انہوں نے مزید بتایا کہ وزارت نے منظوری کے بعد اسلام آباد میں 5 ملکیتی پلاٹوں کی 13 ارب روپے سے زائد میں نیلامی کی جس سے 50 ارب روپے مالیت کی سرمایہ کاری کے علاوہ 10000 لوگوں کو روزگار میسر ہوگا. اس موقع پر وزیر اعظم نے چئیرمین ایف بی آر اور دیگر متعلقہ اداروں کو سرمایہ کاری کرنے والے اورسیز پاکستانیز کیلئے سہولتیں فراہم کرنے کی ہدایت کی. وزیراعظم نے تاکید کی کہ بیرون ملک بسنے والے پاکستانی ہمارا قیمتی سرمایہ ہے اس لئے ان کے لئے ملکی کاروباری سرگرمیوں میں حصہ لینے کی راہ میں حائل رکاوٹیں ترجیحی بنیادوں پر دور کی جائیں.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close