کشمیر

قانون نافذکرنیوالے ادارے سیاست سے نکل پراپنے فرائض انجام دیں،چودھری یاسین

کوٹلی:آزادجموں کشمیر قانون سازاسمبلی میں قائد حزب اختلاف چودھری محمد یاسین نے کہاہے کہ معیشت کی تباہی کے بعد مملکت پاکستان میں امن و امان کی صورتحال بھی تشویشناک ہوتی جا رہی ہے وفاقی دارالحکومت میں بھی لوگ محفوظ نہیں حکومت نے عوام کی جان ومال کی حفاظت کے بجائے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو اپوزیشن کو دیوار کے ساتھ لگانے پر مامور کر رکھا ہے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز اسلام آباد کے ایریا میں علماء کے قتل پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہاکہ جب قانون نافذ کرنے والے ادارے اپنے فرائض کی انجام دہی کے بجائے سیاسی امور پر لگ جائیں تو اس سے دشمن فائدہ اٹھاتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ علماء کرام کا قتل دشمن کی کارروائی بھی ہو سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ پہلے بھی فرقہ وارانہ فسادات کے لیے ایسی کارروائیاں کرتی رہی ہے انہوں نے کہاکہ بھارت نے پاکستان کو کبھی بھی دل سے تسلیم نہیں کیا اسی لیے کبھی کراچی میں اور کبھی بلوچستان میں دہشت گردی کی کارروائیاں کی جس کے واضح ثبوت دنیا کے سامنے آ چکے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اسلام آباد جسے شہر میں بھی اگر اس طرح کے واقعات کا تسلسل جاری رھا تو یہ لمحہ فکریہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ کبھی پولیس کی طرف سے نوجوانوں کا قتل اور پھر ایسے واقعات قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لیے چیلنج ہیں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت اپوزیشن کو دیوار کے ساتھ لگانے کے لیے اداروں کو استعمال کرنے کے بجائے امن و امان قائم کرنے کی جانب توجہ مرکوز کرے ۔انہوں نے کہاکہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو سیاسی معاملات میں مداخلت سے ہٹا کر اصل فرائض کی ادائیگی پر مامور کیا جائے تو ایسے واقعات کا سدباب کیا جا سکتا ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close