پاکستان

اپوزیشن اتحاد میں کوئی دراڑ نہیں،رابطے جاری، ملکر آگے بڑھیں گے،فضل الرحمن

لاہور:پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اعلان کیا ہے کہ 26 مارچ کو مریم نواز شریف نیب پیشی کے موقع پر ہمارے کارکن ان کے ساتھ جائیں گے۔مولانا فضل الرحمان نے اس بات کا اعلان مریم نواز شریف کے ساتھ جاتی امرا میں ملاقات کے بعد میڈیا نمائندوں سے گفتگو میں کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن اتحاد میں کوئی دراڑ نہیں، رابطے برقرار ہیں، مل کر آگے بڑھیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ استعفوں کے حوالے سے پیپلز پارٹی کے فیصلے کا انتظار ہے، امید ہے باقی 9 جماعتوں کی خواہش کا احترام کرے گی۔پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت کے خلاف لانگ مارچ ضرورہوگا نئی تاریخ کا اعلان جلد کیا جائے گا پیپلز پارٹی کے فیصلے کا انتظار ہے جبکہ مسلم لیگ(ن) کی نائب صدر مریم نواز شریف نے کہا ہے کہ جے یو آئی ف اور مسلم لیگ ن خود بھی لانگ مارچ کر سکتی ہیں۔سینٹ میں اپوزیشن لیڈر مسلم لیگ ن سے ہو گا یہی متفقہ فیصلہ کیا گیا تھا۔اس امر کا اظہار انہوں نے اتوار کو جاتی امرا میں ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ہے۔ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ حکومت کے اقدامات ملک کی بقا کے لیے رسک بن رہے ہیں۔مریم نواز کا کہنا ہے کہ اصولی فیصلہ ہوچکاہے کہ سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر ن لیگ کا ہوگا،اور اصول کے تحت تمام جماعتیں اس فیصلے کی پابند رہیں گے۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ عمران خان کی نالائقی نے پورے ملک کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے، ان کا مستقبل ان کی اپنی کارکردگی سے جڑا ہوا ہے، پی ڈی ایم کسی موقع پر حکومت کو پتلی گلی سے نکلنے کی اجازت نہیں دے گی۔دریں اثنا ء پاکستان مسلم لیگ(ن)کی قیادت نے سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان کو تجویز دی ہے کہ عید الفطر کے بعد لانگ مارچ کیا جائے،شرکاء نے کہا کہ اب حکومت کے خلاف جو بھی تحریک یا فیصلہ کیا جائے اس سے کوئی پیچھے نہ ہٹے ۔ پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان مسلم لیگ(ن)کی قیادت سے ملاقات کے لئے جاتی امرا پہنچے، جہاں ان کا استقبال مریم نواز، حمزہ شہباز، رانا ثنااللہ اور پرویز رشید سمیت دیگر رہنمائوں نے کیا۔ ملاقات میں مسلم لیگ(ن)کے قائد نوازشریف بھی ویڈیو لنک کے ذریعے شامل ہوئے۔ذرائع کے مطابق جاتی امرا بیٹھک میں سیاسی صورتحال اور لانگ مارچ کے حوالے سے بات اور پیپلزپارٹی کے استعفے نہ دینے پر تفصیلی مشاورت کی گئی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close