انٹر نیشنل

پاکستان اور جرمنی کا دو طرفہ تجارت کے فروغ ، تعاون بڑھانے پر اتفاق

برلن : پاکستان اور جرمنی نے دو طرفہ تجارت کے فروغ ، سرمایہ کاری اور کثیرجہتی شعبہ جات میں دو طرفہ تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا ہے جبکہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ایف اے ٹی ایف پر معاونت پاکستان کی پالیسیوں پر اعتماد کا مظہر ہے ،جرمنی یورپی یونین اور عالمی سطح پر ایک اہم ملک ہے،دونوں ممالک کے درمیان تعلقات گرمجوشی اور باہمی ہم آہنگی سے عبارت ہیں،جرمنی پاکستان کا سب سے بڑا تجارتی شراکت دار ہیخ ہم تمام شعبہ جات میں اپنے تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے خواہاں ہیں،ہم معاشی سفارت کاری کو بروئے کار لا کر اقتصادی تعاون کو بڑھانے کی پالیسی پر کاربند ہیں ،بھارت نے 5 اگست 2019 کے یکطرفہ اقدامات کے ذریعے جنوبی ایشیا کے امن کو خطرات سے دو چار کیا،بھارت کو مزاکرات کیلئے فضا سازگار بنانا ہو گی۔پیر کو وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی وفد کے ہمراہ جرمن وزارتِ خارجہ پہنچے تو جرمن وزیر خارجہ ہائیکو ماس نے وزیر خارجہ کا پرتپاک خیر مقدم کیا۔وزیر خارجہ نے دورہ جرمنی کی دعوت اور پرتپاک خیر مقدم پر جرمن ہم منصب کا شکریہ ادا کیا ۔ بعد ازاں جرمن وزارتِ خارجہ میں پاکستان اور جرمنی کے مابین وفود کی سطح پر مذاکرات کا انعقاد ہواپاکستانی وفد کی قیادت وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی جبکہ جرمن وفد کی قیادت جرمنی کے وزیر خارجہ جناب ہائیکو ماس نے کی،مذاکرات میں دو طرفہ تعلقات، تجارت، سرمایہ کاری، صحت، سیکورٹی ،دفاع، تعلیم ،سیاحت سمیت کثیر الجہتی شعبہ جات میں دو طرفہ تعاون بڑھانے کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال ہوا ۔اس موقع پر شاہ محمود قریشی نے کہاکہ مجھے خوشی ہے میرا یہ دورہ پاکستان اور جرمنی کے مابین سفارتی تعلقات کو ستر سال مکمل ہونے کے اہم موقع پر ہو رہا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان اور جرمنی کے مابین گہرے تاریخی دو طرفہ مراسم ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان، جرمنی کے ساتھ اپنے دو طرفہ سیاسی، سفارتی و اقتصادی تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کیلئے پرعزم ہے ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close