کشمیر

وزیراعظم کی جسٹس شیراز کیانی کی قبرپر فاتحہ خوانی،دیانتدار جج تھے، فاروق حیدر

ڈڈیال،وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں و کشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے قائم مقام چیف جسٹس آزاد کشمیر ہائی کورٹ جسٹس محمد شیراز کیانی کی وفات پر ان کے مزار پر حاضری دی اور فاتحہ خوانی کی۔وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان جب ان کے مزار پر حاضری کے لیے پہنچے تو پولیس کے چاک و چوبند دستے نے سلامی دی اور گارڈ آف آنر پیش کیا ۔وزیر اعظم نے مزار پر پھول چڑھائے اورمرحوم کے درجات کی بلندی کے لئے دعا کی۔بعد ازاں وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان نے ان کے گھر جاکر فاتحہ خوانی کی اور لواحقین ان کے والد ماجد راجہ گلتاسب خان، چچا چیئرمین راجہ رجاسب، صاحبزدگان محسن شیراز کیانی ایڈووکیٹ، احسن شیراز کیانی اور حیدر شیراز کیانی سے دلی تعزیت کا اظہارکیا۔اس موقع پر وزیر زراعت چوہدری مسعود خالد،مشیر وزیر اعظم نسیم سرفراز،پرنسپل سیکرٹری احسان خالد کیانی،کمشنر میرپور ڈویژن چوہدری محمد رقیب خان،ڈی جی منگلا ڈیم ہاوسنگ اتھارٹی ایاز احمد میر،ڈی آئی جی پولیس چوہدری سجاد حسین،ڈپٹی کمشنر بدر منیر،ایس ایس پی راجہ عرفان سلیم،اسسٹنٹ کمشنرڈڈیال سردار ذیشان نثار،ایڈمنسٹریٹر چوہدری آفتاب احمد،جاوید ظفر ،شعیب عالم ،راجہ علی زمان سمیت دیگر افراد بھی موجود تھے۔وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان نے اس موقع پر ان کے اہل خانہ سے گفتگو کر تے ہوئے کہاکہ چیف جسٹس آزاد کشمیر ہائی کورٹ جسٹس محمد شیراز کیانی ایک باکردار ،دیانتدار اور بہترین جج تھے ۔وہ آزادکشمیر کی اعلیٰ عدلیہ میں ایک مثا ل کی حیثیت رکھتے تھے اور آزادکشمیر کا اہم اثاثہ تھے ۔ان کی وفات سے عدلیہ کو ناقابل تلافی نقصان ہوا ہے۔ان جیسے لوگ صدیوں بعد پیدا ہوتے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close