26

پی ٹی آئی نے دانستہ طور پرترقی کاسفرروکا،شہبازشریف

لاہور: وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پنجاب کی ترقی کا جو سفر ہم نے شروع کیا تھا اسے گزشتہ حکومت نے دانستہ طور پر روکا،پنجاب کی عوام سے مسلم لیگ (ن)کی حمایت کا انتقام لیا گیا،لاہور میں نئے منصوبے تو درکنار، ہمارے شروع کئے گئے منصوبوں کو تعطل کا شکار رکھا گیا،گزشتہ حکومت کے 4 سال پنجاب کو ایک نا اہل اور کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ کے سپرد کیا گیا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی زیر صدارت لاہور میں جاری عوامی سہولت کے ترقیاتی کاموں اور مجوزہ منصوبوں کے حوالے سے اعلی سطحی اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں مشیر وزیر اعظم احد خان چیمہ، نگران وزیر اعلی پنجاب سید محسن نقوی اور وفاقی و صوبائی افسران نے شرکت کی۔اجلاس کو امامیہ کالونی فلائی اوور کے منصوبے کے بارے میں تفصیلی بریفننگ دی گئی۔وزیراعظم نے منصوبے کو عوام کے استعمال کے لئے جلد از جلد مکمل کرنے کی ہدایت کی۔اجلاس کو گوجرانوالہ کے عوام کی سہولت کے لئے لاہور ،سیالکوٹ موٹر وے لنک روڈ کے مجوزہ منصوبے کے حوالے سے بھی آگاہ کیا گیا۔ وزیراعظم شہباز شریف نے اس حوالے سے وزیر اعلی پنجاب کو تین رکنی کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی جو آئندہ اجلاس میں اس منصوبے کے بارے میں تفصیلی بریفنگ پیش کرے گی۔وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ گزشتہ دور میں پنجاب کی ترقی پر توجہ کی بجائے وزارتِ اعلی کے منصب کو وفاق میں سیاسی جوڑ توڑ کیلئے استعمال کیا جاتا رہا۔عوامی فلاحی منصوبے جو اب تک مکمل ہو کر لوگوں کی مشکلات میں کمی کر چکے ہوتے، سالہا سال تاخیر کا شکار رہے۔وزیر اعظم شہباز شریف نے تمام جاری منصوبوں کو جلد از جلد مکمل کرنے کے احکامات بھی جاری کئے ۔علاوہ ازیں وزیر اعظم شہباز شریف نے لاہور میں زیر تعمیر برج سائٹ کا تعمیراتی کام کا اچانک دورہ کیا ۔اس موقع پر نگران وزیر اعلیٰ سید محسن نقوی ، چیف سیکرٹری پنجاب بھی ان کے ہمراہ تھے ۔ ایل ڈی اے حکام اور دیگر افسران نے وزیراعظم کو بریفنگ دی،وزیر اعظم نے متعلقہ حکام کو پراجیکٹ کو اڑھائی کے بجائے ایک ماہ میں مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔چیف انجینئر ایل ڈی اے اسرار سعید نے وزیر اعظم شہباز شریف کو منصوبے پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اوور ہیڈ برج کی لمبائی 540 میٹر اور چوڑائی 11.1 میٹر ہے، ایل ڈی اے کے اس منصوبے کا تخمینہ 1712 ملین ہے۔وزیر اعظم نے سی بی ڈی منصوبے پر تھرڈ پارٹی تبدیل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ منصوبے کی جلد تکمیل سے لوگوں کو سہولت میسر آئے گی۔شہباز شریف نے منصوبے پر 24 گھنٹے کام کر کے دو ہفتے میں مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔وزیراعظم نے کہا کہ ساری مشینیں لگائیں اور کام جلد مکمل کریں، مجھے اڑھائی ماہ کا ٹائم نہ بتائیں، عید کی چھٹیوں کے دوران مزدوروں کو 3 گنا اجرت دیں تو وہ خوشی سے کام کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں